Take a fresh look at your lifestyle.

بنگال حکومت آیوشمان بھارت اور وزیر اعظم کسان سمندھی اسکیموں کےلئے کچھ معاونت کے ساتھ تیار

0

کولکاتا،22،ستمبر: ریاستی وزیر اعلیٰ ممتا بنرجی نے مرکزی وزیر صحت اور مرکزی وزیر زراعت کو خط لکھا۔ مغربی بنگال حکومت مرکزی حکومت کی آیوشمان بھارت اسکیم اور وزیر اعظم کسان سمندھی کا حصہ بننے کےلئے پوری طرح تیار ہے۔ جسے این ڈی اے حکومت نے بڑھایا ہے۔واضح ہو کہ 9 ستمبر کو ، ڈاکٹر مرکزی وزیر صحت ہرش وردھن کو لکھے گئے اپنے خط میں ، وزیر اعلیٰ ممتا بنرجی نے کہا کہ مختلف مواقع پر یہ سنا جاتا ہے کہ مغربی بنگال حکومت مرکزی حکومت کی آیوشمان بھارت اسکیم پر عمل درآمد نہیں کررہی ہے۔ کیوں کہ آیوشمان بھارت کے آغاز سے بہت پہلے ، ریاست نے تمام سرکاری اسپتالوں میں سب کےلئے 100فیصد مفت علاج ، دوائیں اور تشخیص متعارف کرایا تھا۔ چیف منسٹر نے ریاست کی ‘ہیلتھ پارٹنر’ اسکیم پر بھی روشنی ڈالتے ہوئے لکھا کہ اس اسکیم نے بنگال میں 7.5 کروڑ سے زیادہ لوگوں کو فائدہ پہنچا یاہے۔ تاہم وزیر اعلیٰ نے مرکزی وزیر صحت سے اس شرط کے ساتھ حکومت ہند کے ذریعہ اسکیم میں توسیع کرنے کو کہا ہے کہ اس اسکیم کے پورے 100فیصد اخراجات اور پورے فنڈز کو ریاستی حکومت کے ذریعہ روانہ کیا جانا چاہئے۔ دوسری طرف ، ایک ایسے وقت میں جب بی جے پی کسانوں کے معاملے پر ممتا گووردھن پر الزامات عائد کررہی ہے ، یہ سوال کررہی ہے کہ ٹی ایم سی کے کسانوں کے حقوق جب ریاست نے مرکز کے ذریعہ توسیع کی جانے والی کسی بھی کسان دوست اسکیم پر دستخط نہیں کیے ہیں۔ چیف منسٹر ، اسپاٹر 9 پر ، نریندر سنگھ تومر کو وزیر اعظم کسان سمن نیدھی اسکیم کے تحت بنگال کو شامل کرنے کےلئے بھی لکھا گیا تھا۔ تاہم ریاستی مشینری کے ذریعہ براہ راست اخراجات کےلئے رقوم کو ریاستی حکومت کو منتقل کرنا چاہئے۔ ممتا بنرجی کی قیادت میں مغربی بنگال حکومت مرکزی اسکیموں پر مودی سرکار کے ساتھ ہمیشہ ہی چشمک رہی ہے۔ وزیر اعلیٰ ممتا بنرجی نے ہمیشہ اپنی حکومت کی اسکیموں کو فخر کے ساتھ فروغ دیا ہے ، جس نے عالمی سطح پر پذیرائی حاصل کی ہے اور انہیں مرکزی حکومت کے سامنے رکھنے کا دعویٰ کیا ہے۔ ہر سیاسی ریلی میں ، سی ایم ممتا مرکز کی اسکیموں کا سارا کریڈٹ لینے کےلئے اقتدار میں این ڈی اے حکومت کے ذریعہ شروع کی گئی اسکیموں میں کم از کم 40فیصد حصص لینے کےلئے مرکز پر طعنے کسیں گی۔ لیکن اب 2021 کے انتخابات سے قبل ممتا بنرجی حکومت چند شرائط عائد کے ساتھ دو بڑی مرکزی اسکیموں کا حصہ بننے کےلئے تیار ہے ۔ تاہم مرکز کی رائے کا انتظار ہے۔

Get real time updates directly on you device, subscribe now.

Leave A Reply

Your email address will not be published.