Take a fresh look at your lifestyle.

شوبھندوادھیکاری کے استعفے کے بعدممتا نے کمان سنبھالی

کولکاتا،28نومبر: ممتا بنرجی نے وزیر شوبھندوادھیکاریکے وزارت ٹرانسپورٹ ، آبپاشی اور ہیومن ریسورس ڈویلپمنٹ سے استعفیٰ دینے کے بعد باگ ڈور سنبھالی ہے۔ جمعہ کے دن ، شوبھندونے اپنا استعفیٰ ای میل کے ذریعہ وزیر اعلی ممتا بنرجی اور گورنر کو بھجوایا۔ جب انہوں نے صبح استعفیٰ ارسال کیا تو یہ خیال کیا جارہا تھا کہ وزیر اعلی ممتا بنرجی خود بھی پہل کریں گی اور شوبھندومنائیں گے۔ لیکن شام تک ، ممتا بنرجی نے شوبھندوکا استعفیٰ قبول کرلیا اور اپنی کالی گھاٹ کی رہائش گاہ پر ہنگامی اجلاس طلب کیا۔ اس میں اروپ وشواس ، پرتھا چٹرجی ، فرہاد حکیم اور ان کے بھتیجے ابھیشیک بنرجی جیسے سرکردہ رہنما تھے۔ شوبھندوسب سے زیادہ پریشان ہیں ممتا بنرجی کے پارٹی میں ان کے بعد ابھیشیک کو سب سے زیادہ اہمیت دینے کے رویے کی وجہ سے۔ یہاں تک کہ جب ہنگامی اجلاس ہورہا تھا تب بھی یہ قیاس کیا جارہا تھا کہ ممتا بنرجی شوبھندوسے بات کرسکتی ہیں ، کیونکہ انہوں نے صرف وزارتی عہدہ چھوڑ دیا ہے ، وہ ابھی بھی ایم ایل اے اور پارٹی کے ایک بنیادی رکن ہیں۔ لیکن ممتا نے ایسا کچھ نہیں کیا۔ رات بھر ہونے والی اس میٹنگ میں ممتا نے شوبھندوکے ذریعہ تمام وزارتیں چھوڑنے کے بارے میں آگاہ کیا۔ اس کے بعد انہوں نے پارٹی کے اعلی رہنماو¿ں کو ہدایت کی کہ وہ پوری صورتحال کی نگرانی کریں اور سیاسی صورتحال کو نپٹائیں۔ انہوں نے یہ بھی واضح طور پر کہا ہے کہ ”جو معلوم ہے ، اس سے کوئی فرق نہیں پائے گا“۔ ممتا نے واضح کیا کہ ریاست بھر میں ضلعی قیادت کو 2021 کے اسمبلی انتخابات کو ملحوظ خاطر رکھتے ہوئے عوامی تعلقات اور تشہیر کو بڑھانے پر توجہ دینی چاہئے۔ انہوں نے سڑکوں پر بھی تحریک چلانے کی ہدایت کی ہے۔ 7 دسمبر کو ، وہ خود سڑکوں پر نکل سکتی ہے۔ وہ کولکاتا میں ایک ریلی نکالیں گی جس میں وہ مرکز میں بی جے پی حکومت کے خلاف آواز اٹھائیں گی۔ تاہم ، انہوں نے پارٹی کے اعلی قائدین سے کہا ہے کہ وہ شوبھندوادھیکاری کی سرگرمیوں کی نگرانی کریں۔

 

Get real time updates directly on you device, subscribe now.

Comments are closed.