Take a fresh look at your lifestyle.

لاک ڈاون کے درمیان ایک طالب علم کا اغوا اور قتل سے علاقے میں سنسنی

0

شمالی 24 پرگنہ، 25 اپریل: ٹیٹا گڑھ تھانہ علاقہ کے بامن پور میں لا ک ڈاون کے درمیان ایک عجیب و غریب معاملہ پیش آیا ہے۔ ایک 16 سال کے طالب علم سمدار کو گزشتہ جمعرات کو کسی نے اغوا کر لیا اور دوسرے دن اس لڑکے کو قتل کرکے تالاب میں پھینک دیا۔ علاقے میں اس قتل سے ماحول پوری طرح دہشت زدہ ہو گیا ہے۔ پولس میں اغوا کی رپورٹ درج کرانے کے بعد جمعہ کی شب جب پولیس نے چھان بین کے بعد، علاقے سے لا ش برآمد کی۔ پولیس کو شک ہے کہ شر پسندوں نے اغوا کرنے کے بعد گھر والوں سے رقم کا مطالبہ کیا تھا جو نہ دینے پر اس لڑکے کا قتل کر دیا گیا۔علاقائی لوگوں کا کہنا ہے کہ علاقے کے شر پسندوں نے یہ کام انجام دیا ہے۔ پولیس نے لا ش کو اپنی تحویل میں لے کر پوسٹ مارٹم کے لئے بھیج دیا ہے۔ مقامی لوگوں کا کہنا ہے کہ گلا گھو نٹ کر اس بچے کو مارا گیا ہے۔ اس سال مدھیا مک کا امتحان اس نے اچھا پور ودھیا پیٹھ اسکول سے دیا تھا۔ پولیس نے کئی لوگوں سے اس سلسلے میں پوچھ تاچھ شروع کر دی ہے۔ اس کے علاوہ مہلوک کے دوست سے بھی پولیس جانکاری حاصل کررہی ہے۔ اس کا والدین کا کہنا ہے کہ جمعرات کی شب ان کا بیٹا ٹی وی دیکھنے پڑوسی کے گھر گیا تھا۔ لیکن رات 10 بجے تک وہ واپس نہیں لوٹا۔البتہ اس کے فون سے ایک فون آیا تھا۔جس میں کسی نے ہندی میں بات کرتے ہوئے دھمکی دی تھی کہ اگر ساڑھے تین لاکھ روپے نہ دیے گئے تو اس کے لڑ کے کو قتل کر دیا جائے گا۔ اس کے بعد فون کٹ جاتا ہے۔ بار بار فون کرنے کے بعد بھی کوئی فون نہیں لگتا ہے۔ سمدار کے والد نے کہا کہ انہیں شک ہے کہ ان کے بیٹے کو کسی نے اغوا کر لیا ہے۔اس کے بعد وہ اسی رات پنچایت کے ایک ممبر پنکج سے ملے اور انہوں نے پوری بات سنائیں۔ اس کے بعد پنکج پولیس کو اس کی اطلاع دیتا ہے۔پولیس نے جب لوکیشن چیک کیا تو پتہ چلا کہ ان کے لڑکے کا فون کا لوکیشن بابن پور میں پایا گیا۔ تلاشی کے دوران سم دار کا کوئی سراغ نہیں ملا لیکن دوسرے ہی دن ایک خاتون پڑوسی نے یہ اطلاع دی کہ گنگا کے کنارے چپل ایک کرتا اور ایک گلابی ماسک نظر آئی ہے۔ پولیس نے تلاشی کے دوران ایک تالا ب سے لا ش برآمد کی۔لا ک ڈ اون کے دوران یہ پہلا واقعہ ہے جب اس طرح کا حادثہ ہوئے ہیں۔ علاقے میں سنسنی پھیل گئی ہے۔ایک طرف لا ک ڈ او¿ن سے لوگ پریشان ہے وہیں قتل و غارت جیسے واقعات سے بھی لوگ د ہشت میں پڑگئے ہیں۔پولیس چھان بین کر کے اصل مجرم تک پہنچنے کی کوشش کر رہی ہے لیکن اب تک اس معاملے میں کوئی گرفتاری عمل میں نہیں آئی ہے۔

Get real time updates directly on you device, subscribe now.

Leave A Reply

Your email address will not be published.