Take a fresh look at your lifestyle.

ممتا کی شاہ کے دورہ بنگال سے قبل ہنگامی میٹنگ

کولکاتا،18دسمبر:وزیر اعلی ممتا بنرجی کی ترنمول کانگریس (ٹی ایم سی) کو مغربی بنگال میں 2021 کے اسمبلی انتخابات سے قبل مسلسل دھچکا لگ رہا ہے۔ کبھی بی جے پی کے حملے اور کبھی پارٹی میں بغاوت نے ممتا کی مشکلات میں اضافہ کیا ہے۔ جمعرات کو ٹی ایم سی کو دو دھچکے ہوئے۔ ایک طرف پارٹی کے بااثر رہنما ، شوبھندوادھیکاری نے پارٹی چھوڑ دی ، دوسری طرف ایم ایل اے جتیندر تیواری نے بھی ٹی ایم سی سے استعفیٰ دے دیا۔ ادھر اپنے قبیلے کو بچانے کےلئے سی ایم ممتا بنرجی نے آج ٹی ایم سی رہنماو¿ں کا ہنگامی اجلاس طلب کیا ہے۔ ذرائع سے موصولہ اطلاعات کے مطابق ترنمول کے سربراہ ممتا نے جمعہ کے روز پارٹی رہنماو¿ں کا ہنگامی اجلاس طلب کیا ہے۔ اس میٹنگ میں وہ ٹی ایم سی رہنماو¿ں سے صورتحال پر تبادلہ خیال کریں گی اور آگے کا منصوبہ بنائیں گی۔ معلوم ہے کہ جمعرات کے روز ، جنوبی بنگال اسٹیٹ ٹرانسپورٹ کارپوریشن کے صدر دیپتانشو چودھری نے بھی اپنا استعفیٰ سی ایم ممتا بنرجی کو پیش کیا تھا۔
اطلاعات کے مطابق شوبھندوادھیکاری اور جتیندر تیواری کے استعفیٰ کے بعد پارٹی بنگال سمیت پورے ملک میں پیدا ہونے والی فضا کے بارے میں مزید حکمت عملی تیار کرے گی۔ تاہم ، ٹی ایم سی ذرائع کا کہنا ہے کہ یہ ہنگامی ملاقات نہیں ہے ، بلکہ پارٹی کی باقاعدہ ملاقاتوں کا صرف ایک حصہ ہے۔ ان کا کہنا ہے کہ ہر جمعہ کو پارٹی صدر بیچوں میں ٹی ایم سی رہنماو¿ں سے ملتے ہیں۔ یہ بھی معلوم ہونا چاہئے کہ وزیر داخلہ امیت شاہ جمعہ کے روز یعنی دو روزہ دورے پر مغربی بنگال کے دورے پر جارہے ہیں۔ قبل ازیں سی ایم ممتا نے ہنگامی اجلاس طلب کیا۔ ایسی صورتحال میں اس ملاقات کو بہت اہم سمجھا جاتا ہے۔

Get real time updates directly on you device, subscribe now.

Comments are closed.