Take a fresh look at your lifestyle.

کویڈ : اندر جیت ساہا کی پریڈیکٹرکی ایجاد

0

کولکاتا،15،ستمبر: نیشنل ٹیکنیکل اساتذہ ٹریننگ اینڈ ریسرچ انسٹی ٹیوٹ آف ٹیکنیکل سائنسز اینڈ انجینئرنگ (این آئی ٹی ٹی ٹی آر) کے محکمہ میں اسسٹنٹ پروفیسر اندرجیت ساہا نے حال ہی میں آن لائن وائرس کے تسلسل کی پیش گوئی کےلئے ایک ویب پر مبنی کویڈپریڈیکٹر تیار کیا ہے۔ جس کا سنگل نیوکلیوٹائڈ پولیمورفزم (ایس این پی) کے تناظر میں جینیاتی تغیرات کا پتہ لگانے کےلئے 566 ہندستانی سارس پر2 جینوموں کا تجزیہ کیا ہے۔اس تحقیق کو سائنس اور انجینئرنگ ریسرچ بورڈ (ایس ای آر بی) نے اسپانسر کیا ہے ۔ یہ شعبہ سائنس و ٹکنالوجی (ڈی ایس ٹی) کے تحت ایک قانون ساز ادارہ ہے ، جو انفیکشن ، جینیات اور ترقی کے نام سے جریدہ میں شائع ہوتا ہے۔ انھوں نے بنیادی طور پر یہ پایا ہے کہ 64 میں سے 57 ایس این پی ہندستانی سارس کو2 جینوم کے 6 کوڈنگ خطوں میں موجود ہیں ، اور یہ سب فطرت کے لحاظ سے بے کار ہیں۔سائنسدانوں نے ہند سمیت دنیا بھر میں وائرس کو -2 جینوم میں جینیاتی تغیرات کی نشاندہی کرنے کےلئے ٹریک پر گامزن ہیں۔ ممکنہ اہداف پروٹین کی تلاش کرتے ہیں۔نتائج سے پتہ چلتا ہے کہ ریاست ہائے متحدہ امریکہ ، انگلینڈ ، اور ہند کویڈ متاثرہ ممالک میں اعدادوشمار کے ساتھ سرفہرست تین ممالک ہیں۔ جن میں 3.27فیصد ، 3.59فیصد اور 5.39فیصد ہیں ، جبکہ دوسرے 72 ممالک میں متاثرین کی تعدادہے۔ سائنسدانوں نے عالمی سطح پر موجود وائرس کو -2 جینوم میں تغیر پزیر پوائنٹس کی دریافت کے لءایک عالمی درخواست تیار کی ہے۔

Get real time updates directly on you device, subscribe now.

Leave A Reply

Your email address will not be published.