Take a fresh look at your lifestyle.

رشوت کے بلے ملازمت اور اغوامعاملے میں ایک جوڑا گرفتار

ڈائمنڈ ہاربر،27اکتوبر: علاقے میں بیروزگار نوجوانوں کو نوکری دینے ، لڑکیوں سے بھاری رقوم وصول کرنے اور رقم بھتہ لینے کے الزام میں پولیس نے ماتھابھانگاسے ایک جوڑے کو گرفتار کیا۔ جنوبی 24 پرگنہ کے سندربن پولیس کی تیاری نے اس ساری اسکیم کو ناکام بنا دیا۔ اغوا کاروں کو پولیس نے کوچ بہار کے ماتھابھنگا سے پکڑا تھا۔ تینوں اغوا کنندہ گان کو بھی بچایا گیا۔ ڈیرہ میں اغوا کا ڈرامائی کارروائی ہے۔ کرکا ڈویپ عدالت نے ملزم کو پولیس تحویل میں بھیج دیا۔ پولیس کے مطابق ایک خاتون اور اس کے مرد دوست نے سرکاری ملازمت دلانے کے جھوٹاوعدہ کرکے بے روزگار نوجوان سے لاکھوں روپے ٹھگے۔ جب نوکری نہیں ملی تو لوگوں نے ان سے رقم مانگنا شروع کردی۔ بڑھتا ہوا دباو¿ دیکھ کر ، خاتون نے اپنے شوہر کی مدد سے اغوا کا منصوبہ بنایا۔ 9 اکتوبر کو ، تلہاٹ پولیس اسٹیشن کے نواحی گاو¿ں کا رہائشی ، شہنشاہ نوبان اپنے گھر سے پراسرار طور پر غائب ہوگیا۔ 11 اکتوبر کو ، اس شخص کی اہلیہ فردوسی نگبان کو 12 لاکھ کے تاوان کےلئے کال موصول ہوئی۔ 12 کو ، انہوں نے تلہاٹ پولیس اسٹیشن میں شکایت درج کروائی۔ تحقیقات کے مطابق اغوا کاروں نے شہنشاہ کو ماتھابھنگا میں ایک خفیہ ہاسٹل میں چھپا لیا تھا۔ اس کے بعد سندربن ڈسٹرکٹ پولیس نے کارروائی کا مطالبہ کیا۔ پولیس نے ایس پی ویبھوتیواری کی ہدایت پر دو الگ الگ ٹیمیں تشکیل دیں۔ تلہاٹ تھانہ کے سب انسپکٹر انوپ منڈل کی سربراہی میں ایک ٹیم کوچ کوہار روانہ ہوئی۔ ضلع کے ایڈیشنل سپرنٹنڈنٹ پولیس سنتوش منڈل کی سربراہی میں ٹیم نے تحقیقات کی رفتار پر نظر رکھنا شروع کردی۔ ضلع کوکبہار کی پولیس کے ساتھ مل کر پولیس نے ماتھابھانگاکے علاقے کی تلاشی لی اور اغوا کیے گئے شہنشاہ نیگبان اور دو دیگر افراد کو خفیہ ٹھکانے سے بچایا۔ تفتیش کے دوران ، جوڑے رتول دیوورمن اور اس کی اہلیہ من من کو گرفتار کیا گیا تھا۔ قیدیوں کو عدالت کے روبرو پیش کرنے کے بعد انہیں تین دن کے ٹرانزٹ ریمانڈ پر کاکڈپ سب ڈویڑنل عدالت بھیجنے کا حکم دیا گیا۔ معاملے کی تفتیش جاری ہے۔

Get real time updates directly on you device, subscribe now.

Comments are closed.