Take a fresh look at your lifestyle.

مہاجر مز دوروں کو خیر و خوبی سے لانے کا کام اب مرکز کا دردِ سر ہے: ادھیر

0

کولکاتا،11مئی: پارلیمنٹ کے مانسون سیشن میں کانگریس کے سرکر دہ لیڈر و ایم پی ادھیر رنجن چودھری نے پوری توانائی سے یہ بات سامنے رکھی کہ مرکزی حکومت کا یہی نمایاں کام ہے کہ وہ کس طرح دیگر ریاستوں میں پھنسے کاریگر و مز دوروں کو ان کے گھر لوٹنے کا انتظام کرے۔ اب یہ مرکزی حکومت ہی طے کرے گا کہ کس طرح اس عمل کو تیز و موثر کیا جائے۔ تادم تحریر اس ہدایت کے بعد مرکزی حکومت نے 12مئی سے پسنجر ٹرین کو چلانے کا فیصلہ لیا ہے ادھیر رنجن چودھری نے یہ بھی کہا کہ مرکز نے جو بھی ارادہ کیا ہے اس سے مجھے کوئی اعتراض نہیں ہے جب کہ میں یہ چاہتا ہوں کہ کسی بھی صورت سے ریاستوں میں بکھرے ہو ئے مز دوروں کو جلد ان کے گھر والوں تک انہیں بھیجنے کا وسیلہ پیدا کیا جائے۔ یاد رہے کہ اس وبا کے پھیلتے ہی مرکز نے کوئی بھی ٹھوس پالیسی اختیار نہیں کیا۔ بلکہ وعدے وعید تک ہی ٹال مٹول کا رویہ اپنایا۔ اب جب کہ مرکزی حکومت کے ایما پر انڈین ریل نے یہ اعلان کر دیا ہے کہ12مئی سے 15عدد ٹرینیں چلےں گی تا کہ مز دوروں کا تدارک ہو سکے۔ یاد رہے کہ25 مارچ سے پورے ملک میں وبائی مرض کی وجہ سے لاک ڈاو¿ن نافذ کر کے تمام مز دوروں کو معطل کر دیا گیا تھا۔ ادھیر نے اس بات پربھی زور دیا کہ میں نے اس دوران پارلیمنٹ کو بند کرنے کا مشورہ دیا تھا مگر اس پر کان نہ دھرا گیا۔ کیونکہ بھاجپا حکومت اس وقت مدھیہ پر دیش میں کانگریس حکومت کو بر طرف کرنے میں مشغول تھی اور اقتدار پر قابض ہونے کا ارادہ رکھتی تھی اور ہوا بھی وہی۔ لاک ڈاو¿ن نافذ کر دیا گیا اب تو حکومت کی مرضی پر ہے کہ پارلیمنٹ کی کا رروائی جب چاہے کرےں اس وقت بھی ہر پارٹی کے نمائندے اپنے نظریے کو پیش کرنے میں تاخیر نہیں کرے گی۔

Get real time updates directly on you device, subscribe now.

Leave A Reply

Your email address will not be published.