Take a fresh look at your lifestyle.

ڈاکٹر کفیل خان کی رہائی کیلئے ادھیر رنجن چودھری نے پی ایم مودی کو خط لکھا

کولکاتا 4اگست:لوک سبھا کے رکن پارلیمنٹ اور کانگریس کے رہنما ادھیر رنجن چودھری نے منگل کے دن وزیر اعظم نریندر مودی کو ایک خط لکھ کر اتر پردیش میں مبینہ طور پر اشتعال انگیز تقریر کے سلسلے میں قومی سلامتی ایکٹ (راسوکا) کے تحت گرفتار ڈاکٹر کفیل خان کی رہائی کی درخواست کری ہے۔ اس سے قبل کانگریس کے جنرل سکریٹری پریانکا گاندھی واڈرا بھی اتر پردیش کے وزیر اعلی سے ڈاکٹر کفیل کی رہائی کے لئے درخواست کرچکی ہیں۔ ادھیر رنجن نے کہا کہ کفیل کے ساتھ ‘سراسر ناانصافی’ ہو رہی ہے اور ‘رام راج’ میں کوئی ناانصافی ، امتیازی سلوک اور انتقامی کارروائی نہیں ہے۔ اہم بات یہ ہے کہ کچھ ماہ قبل کفیل خان کو راسوکا کے تحت ترمیم شدہ شہریت ایکٹ (سی اے اے) کے خلاف اشتعال انگیز تقاریر کرنے کے الزام میں گرفتار کیا گیا تھا۔ اس وقت وہ متھرا ڈسٹرکٹ جیل میں بند ہے۔ خط میں ادھیر رنجن چودھری نے کہا ، "میں نے اپنی پارٹی کی طرف سے ، پارلیمنٹ کے اندر اور باہر اس سی اے اے کی مخالفت کی۔” تاہم ، میرے یا ملک بھر کے لاکھوں مظاہرین کے خلاف راسوکا نہیں لگایا گیا ہے۔ "انہوں نے وزیر اعظم سے کفیل کے ساتھ انصاف کرنے کی اپیل کی۔ کانگریس کے سینئر رہنما نے کہا ، "اقوام متحدہ جیسے بین الاقوامی فورموں سے کہا گیا ہے کہ کفیل خان کو رہا کیا جائے۔ میرا ماننا ہے کہ رام راج ناانصافی امتیازی سلوک اور انتقام کا مخالف ہے۔

Get real time updates directly on you device, subscribe now.

Comments are closed.