Take a fresh look at your lifestyle.

اویسی کےساتھ ممتابنرجی کی نازیبا تصویر فیس بک پر شےئر کرنے کے الزام میں نوجوان گرفتار

ہگلی،6اگست ( عوامی نیوز بیورو ) ملک میں قومی یکجہتی کو داغدار کرنے میں کچھ مخصوص سوچ و فکر کے لوگ لگاتار لگے ہوئے ہیں۔ دیگر ریاستوں کے ساتھ مغربی بنگال کا ہگلی ضلع بھی اب ان کاموں سے پیچھے نہیں رہا۔ ےہاں بھی کچھ لوگ فضاءکو بگاڑنے کی کوشش میں لگے ہوئے ہیں۔ گزشتہ کل اگست ماہ کا پہلا لاک ڈاو¿ن تھا اور اسی دن اترپردیش کے آیودھیامیں رام مندر کی سنگِ بنیاد رکھی جارہی تھی۔ اسی درمیان ریاستی وزیر اعلیٰ اور حیدرآباد کے اقلیتی رہنماءاسد الدین اویسی کے نازیبا تصویر فیس بک پر پوسٹ کےا گےا ۔ تھوڑی ہی دیر کے بعد یہ تصویر وائرل ہوگئی۔ اس قسم کی تصویر دیکھ کر لوگ بھڑک اٹھے اور تھانے میں اس کی شکایت کی۔ یہ واقعہ ہگلی ضلع کے گوگھاٹ بھادور علاقے کا ہے۔ اس معاملے میں پولیس اور مقامی ترنمول رہنماءسوپرکاش پوریل نے تفصیلات بیان کرتے ہوئے بتایا کہ شوشل میڈیا پر جب ہم نے اس طرح کی گندی تصویر دیکھی تو فوراً گوگھاٹ تھانے میں تحریری شکایت درج کرائی۔ شکاےت ملتے ہی پولیسنے تصویر پوسٹ کرنے والے کیشناخت شروع کردی۔ ادھر تھوڑی ہی دیر میں یہ خبر آگ کی طرح گوگھاٹ علاقے میں پھیل گئی اورلوگ رات کو ہی گھروں سے باہر نکل کر احتجاج کےلئے کھڑے ہوگئے۔ پولیس نے حالات قابو میں کےا اور صبح ہوتے ہی چھوٹو چکرورتی نامی نوجوان کو گرفتار کیا۔ آج اسے آرم باغ محکمہ عدالت لے جا ےا جا رہا تھا تو اس نے صحافیوں کو بتایا کہ میں نے تصویر ایڈٹ نہیں کےا ہےبلکہ صرف شیئرکیا ہے۔ اس سے پوچھا گیا کہ وزیر اعلیٰ کی اس قسم کی تصویر شیئررکرنے کے پیچھے تمہارا کےا مقصد ہے؟ اس نے کہا کہ مےرا کوئی مقصد نہیں تھا،مجھ سے غلطی ہو جو تصویر شےئر کر دی۔ مجھے ایسا ہرگز نہیں کرنا چاہئے تھا۔ ترنمول رہنماءپوریل نے مزید کہا کہ اس طرح کی تصویر فیس بک پر شیئرکرنا گھناو¿نی حرکت ہے۔ اس نے ایسا کرکے مغربی بنگال کی ماں بہنوں کی توہین کی ہے۔ اس طرح کی گندی حرکت کرنے والا شخص صرف مغربی بنگال کےلئے ہی نہیں بلکہ پورے ملک کےلئے خطرہ ہے۔ ہمارا مطالبہ ہے کہ پولیس اسکی تہہ تک جائے اور ایسی حرکت کرنے والے کو سخت سے سخت سزا دے تاکہ آئندہ پھر کوئی خواب میں بھی اےسی گندی حرکت کرنے کے متعلق نہ سوچے۔

Get real time updates directly on you device, subscribe now.

Comments are closed.