Take a fresh look at your lifestyle.

بھگوا رہنماﺅں کی ترنمول میں شمولیت کی خبر نا قابل یقین :بی جے پی قائدین

0

کولکاتا،3اگست:ریاست میں بی جے پی قائدین کی ترنمول میں شمولیت کی اطلاعات کی بھارتیہ جنتا پارٹی نے تردید کی ہے۔ پارٹی کے قومی جنرل سکریٹری اور ریاستی بی جے پی انچارج کیلاش وجئے ورگیہ نے پیر کو ٹویٹ کیا اور میڈیا کو ایسی خبریں چلانے کی مذمت کی۔ ساتھ ہی اسے نا قابل یقین قرار دیا ۔انہوں نے واضح کیا کہ پارٹی کے تمام ایم پی قائدین بی جے پی کے ساتھ اور مودی جی کی قیادت میں کام کررہے ہیں۔قابل ذکر ہے کہ بی جے پی کے 21 رہنماو¿ں کی ترنمول واپسی کی خبر ایک نیوز چینل چلا رہا ہے۔ اس کے بعد بی جے پی کے مرکزی وزیر مملکت بابول سپریو ، دیوشری چودھری ، مکول رائے اور ریاستی بی جے پی صدر دلیپ گھوش سمیت بہت سے رہنماو¿ں نے اس کی تردید کی ہے۔ اس کے علاوہ ریاستی بی جے پی کے میڈیا انچارج سپتریشی چودھری نے کلکتہ پریس کلب کے صدر کو بھی ایک خط لکھ کر مذکورہ نیوز چینل کے خلاف قانونی کارروائی کرنے کےلئے کہا ہے۔وجئے ورگیہ نے ٹویٹ کیا ہے کہ کچھ نیوز چینلز بی جے پی کے ممبران اسمبلی کی ٹی ایم سی جانے کی فرضی خبریں چلا رہے ہیں۔ ہم ایسی کسی بھی خبر کی مذمت کرتے ہیں۔ انہوں نے مزید کہا کہ تمام اراکین پارلیمنٹ بی جے پی کے ساتھ ہیں اور مودی جی کی قیادت میں کام کر رہے ہیں۔ یونین اسٹیٹ منسٹر دیوشری چودھری نے کہا کہ بی جے پی کے تمام ممبران اسمبلی بی جے پی کے ساتھ ہیں اور مودی جی کی قیادت میں کام کررہے ہیں۔ مرکزی وزیر مملکت بابول سپریو نے بھی ٹویٹ کیا ہے کہ فیک نیوز ، فیک نیوز۔ ان پر یقین نہ کریں۔وہیںبی جے پی سنٹرل کمیٹی کے ممبر مکل رائے نے ٹویٹ کیا ہے کہ پھر بے بنیاد خبریں۔ ایسی خبروں سے میڈیا کی ساکھ کو ٹھیس پہنچتی ہے۔بی جے پی کے ممبر پارلیمنٹ نشیتھ پرمانک ، بی جے پی کے ممبر پارلیمنٹ ارجن سنگھ ، رکن پارلیمنٹ راجو بشسٹ اور دیگر قائدین نے بھی ٹویٹ کرکے ایسی خبروں کی تردید کی ہے۔

Get real time updates directly on you device, subscribe now.

Leave A Reply

Your email address will not be published.