Take a fresh look at your lifestyle.

ترنمول 2019میں ہاف 2021 میں صاف : میگھ وال

0

کولکاتا،30،جون :مرکزی وزیر مملکت برائے پارلیمانی اور بی جے پی کے سینئر رہنما ارجن رام میگھوال نے منگل کے روز مغربی بنگال کی وزیر اعلیٰ ممتا بنرجی پر ورچوئل ریلی کے ذریعے حملہ کیا۔انہوں نے الزام لگایا ہے کہ کرونا دور میں ممتا بنرجی کی حکومت لوگوں کو امداد فراہم کرنے میں امتیازی سلوک کرتی ہے۔ بی جے پی کارکنوں پر ظلم و ستم کے باوجود اس کے پارٹی کارکن خدمات انجام دے رہے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ بی جے پی نے 2019 کے لوک سبھا انتخابات میں ترنمول کانگریس کو شکست دی تھی اور اب وہ 2021 کے اسمبلی انتخابات میں اسے صاف کردے گی۔ویڈیو کانفرنسنگ کے ذریعہ دہلی سے بنگال تک عوامی مکالمہ ریلی سے خطاب کرتے ہوئے میگھوال نے کہا کہ مغربی بنگال میں مزدور بھی پریشانی کا شکار ہیں۔ ان کے ساتھ ناانصافی کی جارہی ہے لیکن کارکنوں کو حوصلہ بنائے رکھنا ہوگا۔ میگھوال نے کہا ممتا بنرجی کا برتاو¿ آئین کے مطابق نہیں لگتا ہے۔ کسی بھی آئین ساز نے گورنر کے بارے میں سوچا بھی نہیں تھا کہ کسی یونیورسٹی میں انہیں جانے نہیں دیا جائے گا۔ انہوں نے کبھی سوچا بھی نہیں تھا کہ ایسی وزیر اعلیٰ آئےں گیں۔جن کے کارکن گورنر کو یونیورسٹی میں جانے کی اجازت نہیں دیں گے۔انہوں نے کہاکہ ممتا بنرجی کو آئین پر کوئی اعتماد نہیں ہے ، آئین کے آرٹیکل پر اعتماد نہیں ہے۔ آئین کے دفعات پر کوئی اعتماد نہیں ہے ۔ وہ صرف ترنمول لیڈر کی حیثیت سے کام کررہی ہیں۔ 2021 میں بنگال میں بی جے پی کی حکومت تشکیل پانا طے ہے۔ انہوں نے کہا وزیر اعظم نریندر مودی کا خود انحصار ہندستان کی تصور 21 ویں صدی میں ہندستان کو عالمی گرو کے مقام پر بلندی پر لے جائے گا۔ انہوں نے کہا کہ 1894 میں امریکہ کے شکاگو میں سوامی ویویکانند نے بھی یہی تصور پیش کیا تھا۔ بنگال کی سرزمین ڈاکٹر شیاما پرشاد مکھرجی کا آبائی گھر رہا ہے۔ انہوں نے 1952 میں خواب دیکھی تھا۔کشمیر سے آرٹیکل 370 کا انخلاءانہیں سچی خراج تحسین ہے۔مودی کے وقت رام مندر کی تعمیر تین طلاق اور شہریت ترمیمی بل جیسے اہم فیصلے لئے گئے ہیں۔ تمام شعبے میں خود انحصار کرنے کی آواز دی گئی ہے خیالوں کو بھی خود کفیل ہونا ہوگا۔

Get real time updates directly on you device, subscribe now.

Leave A Reply

Your email address will not be published.