Take a fresh look at your lifestyle.

کرونا مرض سے پولس اہلکار زیادہ متاثر شکایات درج کرانے کا انتظام تھانے سے باہر

کولکاتا،20جولائی: اس بار کرونا وائرس جیسے موذی مرض سے مقابلہ کرنے میں کولکاتا پولس نے بھی زبر دست احتیاط برتا ہے۔ در اصل اس ان دیکھے مرض نے اب تو پولس کے اعلیٰ افسران سے لے کر پولس اہلکاروں کو بھی اپنے شکنجے میں کسنا شروع کر دیا ہے۔ با وثوق ذرائع کے مطابق اس وقت کولکاتا پولس کے ۰۰۷ اہلکار اس موذی مرض میں مبتلا ہیں ان میں قصبہ کے لگ بھگ ۸۱ پولس اہلکار بھی ہیں۔ چارو مارکیٹ تھانے کے ۹ پولس والے بھی اسی مرض کے شکار ہیں پھر بھی ان میں سے کئی پولس اہلکار صحت یاب ہو کر اپنے بیرک لوٹ گئے ہیں۔ جب سے قصبہ تھانے میں کرونا وائرس کا خطرہ بڑھا ہے۔ تب سے تھانے کے گیٹ کے سامنے یہ نوٹس دکھا گیا ہے اور اس پر لکھا ہے۔ اب اس وقت ایک زبر دست کوویڈ -۹۱ علاقے میں داخل ہورہے ہیں اور تھانے کے گیٹ کے سامنے ایک عارضی پنڈال بنایا گیا ہے تا کہ شکا یت کنندگان وہیں اپنی شکایت درج کر وا سکتے ہیں انہیں تھانے کے اندر آنے کی ضرورت نہیں۔ اس وقت پورے کولکاتا شہر میں کرونا کا عتاب پورے زوروں پر ہے۔ جس کی وجہ سے کولکاتا پولس کے ایک سراغ رساں کی بیوی بھی زندگی ہار بیٹھی ہے اور اسی کے ساتھ کرونا سے خود پلب کانتی گھوش بھی جنگ کر رہے ہیں اس کرونا کے اثر سے ان کی بیوی جانبر نہ ہو سکی اور اس وقت پلب کانتی گھوش ایک نر سنگ ہوم میں زیر علاج ہیں۔

Get real time updates directly on you device, subscribe now.

Comments are closed.