Take a fresh look at your lifestyle.

ترنمول ایم ایل اے اور وزرا کو اب ’حکومت‘ پر اعتماد نہیں :دلیپ گھوش

کولکاتا،28نومبر: بھارتیہ جنتا پارٹی (بی جے پی) مغربی بنگال یونٹ کے صدر دلیپ گھوش نے کہا ہے کہ ترنمول کانگریس کے ایم ایل اے اور وزرا نے ریاست کی ممتا بنرجی حکومت سے اعتماد کھو دیا ہے۔ صحافیوں سے بات کرتے ہوئے دلیپ گھوش نے کہا کہ اگر ترنمول کانگریس کے ایم ایل اے پارٹی پر بھروسہ نہیں کررہے ہیں تو عام لوگ کیسے کریں گے۔ٹی ایم سی رہنما شوبھندوادھیکاری کے استعفیٰ کے بعد وزیر اعلی کی رہائش گاہ پر ہنگامی اجلاس کا حوالہ دیتے ہوئے انہوں نے کہا”دیدی ریاست کی تباہی کے انتظام میں ناکام ہوچکی ہیں اور اب وہ پارٹی کے ڈیزاسٹر مینجمنٹ کے انتظام میں مصروف ہیں“۔ اب اس طرح کی ملاقاتیں زیادہ ہوں گی ، کیوں کہ بہت سے لوگ بی جے پی میں شامل ہونے کےلئے لائن میں ہیں۔
انہوں نے کہا کہ توقع ہے کہ بی جے پی صدر جے پی نڈا 8 یا 9 نومبر کو مغربی بنگال آئیں گے۔ ریاستی بی جے پی صدر نے کہا ’ترنمول کے دن اب گزر چکے ہیں۔ پولیس ان کے ماتحت ہے ، پھر بھی لوگ ہمارے ساتھ شامل ہو رہے ہیں ، جس کا مطلب ہے کہ پارٹی اب ختم ہوگئی ہے‘۔جمعہ کے روز ، ترنمول کانگریس کے ایم ایل اے مہر گوسوامی پارٹی چھوڑ کر بی جے پی میں شامل ہوگئے۔ انہوں نے کہا کہ وزیر اعظم نریندر مودی کے ویڑن کے مطابق وہ ریاست میں ایک ’نئے سیاسی دور‘ کےلئے پرامید ہیں۔ گھوش نے کہا ’گوسوامی کی بی جے پی سے وابستگی ابھی شروع ہورہی ہے ، آنے والے مہینوں میں زیادہ لوگ بی جے پی میں شامل ہوں گے‘۔

 

Get real time updates directly on you device, subscribe now.

Comments are closed.