Take a fresh look at your lifestyle.

اقتدار میں آنے پر یوپی کی طرح جنگل راج کا خاتمہ یقینی:دلیپ گھوش

0

کولکاتا،11جولائی:بھارتیہ جنتا پارٹی کی مغربی بنگال یونٹ کے صدر دلیپ گھوش نے کہا ہے کہ بھارتیہ جنتا پارٹی کی حکومت کے قیام کے بعد بنگال میں یو پی طرز پرغنڈوں کے جنگل راج کا خاتمہ یقینی ہوگا۔واضح ہو کہ یوپی میں اپوزیشن بدنام زمانہ گینگسٹر بکاس دوبے کے انکاو¿نٹر پر مستقل حملہ آور ہے۔برسراقتدار پارٹی کی ترنمول کانگریس کے رکن اسمبلی مہووا موئترا نے الزام لگایا کہ اتر پردیش پولس نے جعلی مقابلوں کرنے والوں کو مار ڈالا۔ ممتا کابینہ میں اقلیتی وزیر فرہاد حکیم نے بکاس دوبے کا مقابلہ دہشت گردوں سے کیا ہے اور اتر پردیش پولیس کو مجرم قرار دیا ہے۔ آج صبح دلیپ گھوش نے جوابی کارروائی کی ہے۔ وہ ایکو پارک میں صبح کی سیر کے لئے پہنچے تھے۔اس دوران مدنی پور کے ایم پی گھوش نے میڈیا کو بتایا کہ جن کی کمر نہیں ہے ، وہ انکاو¿نٹر کے بارے میں کیا بات کریں گے؟انہوں نے کہا کہ جو لوگ انکاو¿نٹر کے بارے میں سوالات اٹھا رہے ہیں وہ انکاو¿نٹر کرنے کی صلاحیت رکھتے ہیں؟ وہ (ترنمول کانگریس) اپوزیشن لیڈروں پر ہی گولی چلا سکتے ہیں۔ اگر بھارتیہ جنتا پارٹی کو اقتداملا تو پھر جو ہوسکتا ہے اسے اتر پردیش کی تعبیر ہوگی۔ انہوں نے مغربی بنگال کے مسلسل گرتے ہوئے امن و امان پر بھی تنقید کی۔ دلیپ گھوش نے بتایا کہ مغربی بنگال میں غنڈہ راج ہے۔ یہاں کوئی امن و امان موجود نہیں ہے۔ اگر آپ یہ سمجھنا چاہتے ہیں کہ امن و امان کیا ہے ، تو آپ کو بھارتیہ جنتا پارٹی کی حکومت والی ریاستوں میں جانا چاہئے۔ جب بنگال میں بی جے پی کی حکومت آئے گی تو یہ ظاہرہو جائے گا کہ جنگل راج کو کس طرح ختم کیا جاتا ہے۔

Get real time updates directly on you device, subscribe now.

Leave A Reply

Your email address will not be published.