Take a fresh look at your lifestyle.

درگاپوجا میں مودی کا بنگالیوں سے ورچوئل خطاب

کولکاتا10 اکتوبر:© بنگالیوں کا سب سے بڑا تہوار درگاپوجا کی ہماہمی اب شروع ہوچکی ہے اوراس درگاپوجا میں شامل ہونے کے لئے ہندستان کے وزیراعظم نریندرمودی بھی آرہے ہیں۔ مگروہ بذات خود نہیں آئیں گے ورچول کانفرنس کے ذریعہ وہ یہاں کے بنگالیوں سے خطاب کریں گے انہیں درگاپوجا کی مبارکبادیاں دیںگے۔ اس کی توثیق بھاجپا کے محاسب کیلاش وجئے ورگیہ نے کی ہے ۔ انہوں نے کہاکہ 22 اکتوبر شسٹی کی شام کو وزیراعظم ایک ورچول کانفرنس طلب کیاہے۔ کرونا کے ماحول میں سماجی دوری رکھتے ہوئے ۔ انہوں نے اس ورچول کانفرنس کو ہی خطاب کرنے کابہترذریعہ سمجھا۔ اس دن پوجا کی مذہبی کارروائی اوروزیراعظم کاخطاب ایک ساتھ چلے گا۔ کولکاتا کے کئی پوجا پنڈال میں مخصوص طورپر یہ خطاب کاسلسلہ برقراررکھاجائے گا۔ کیلاش جی نے یہ بھی بتایاکہ رفتہ رفتہ یہ پوجا اب ایک مخصوص طبقے سے نکل کردوسرے مذہب کے لوگوں کے اندر سماتاجارہاہے۔ اب توبنگالیوں کے علاوہ اس تہوار کومسلمان، بدھ، سکھ، جین وغیرہ بھی پورے جوش سے منارہے ہیں۔ اتنا ہی نہیں بلکہ اس بڑے تہوار میں باہرملک سے بھی لوگ آرہے ہیں۔ اس میںشامل ہونے کے لئے۔ اب تو بنگال کایہ بڑا پوجا ایک میلے کارنگ اختیار کرچکا ہے جب کہ کرونا کے اس ماحول میں وزیراعلیٰ نے ریڈ روڈ پرکارنوال بڑے پیمانے پر منایاجائے گا مگراس پوجا میں حفاظتی تدابیر کی کتنی پابندی کی جائے گی ، وزارت صحت اس پرمتفکر ہے کہا تو یہ بھی گیا کہ ہے کہ کنٹونمنٹ زون بھی پوجا پنڈال نہیں بنایاجائے گا۔ نہ ہی لوگوں کی بھیڑ جمنے دی جائے گی ، ایسے میں وہاں کے لوگ گھر میں بیٹھ کر پوجا کالطف اٹھائیں گے انہیں باہر نہیں نکلنے دیاجائے گا۔ مرکز نے یہ بھی سختی کی ہے کہ 65 برس سے زیادہ اور10 برس کے نیچے والے بچوں کوباہر نکلنے سے روکاجائے گا پوجا کمپنیوں کو اس پردھیان دینے کوکہاگیاہے۔

Get real time updates directly on you device, subscribe now.

Comments are closed.