Take a fresh look at your lifestyle.

چندن نگر کے دو بھائی بہنوں نے عید کی خریداری کرنے والی رقم کو وزیر اعلیٰ ریلیف فنڈ میں دے دیا

ہگلی5/جون ( محمد شبیب عالم ) کہتے ہیں کہ حوصلہ بلند ہوتو انسان کچھ بھی کرنے کو تیار ہے ۔ آج پورے ملک میں کورونا نامی مہلک مرض کی وجہ سے کو مسائل پیدا ہوئے ہیں ۔ اس سے ہر کوئی روبرو ہے چاہے نوجوان ہو چاہے بڑے ہوں چاہے بزرگ یا بچے ہوں ہر کوئی اسکی اثرات سے واقف ہیں اور یہی وجہ ہے کہ دوسرے بچوں کی طرح یہ بچے بھی حالات کو سمجھے اور عید کے لئے والدین سے ملی کپڑے خریدنے کی رقم کو وہ کپڑا نہیں خرید کر وزیر اعلیٰ ریلیف فنڈ میں دینے کے لئے والدین سے مشورہ کیا ۔ والدین بچوں کی باتیں سن کر بےحد متاثر ہوئے اور کہنے لگے میں قربان جاؤں تمہارے حوصلوں پر ۔ والدین بچوں کو چومتے خوشی کا اظہار کیا اور اپنی جانب سے مزید رقم ملا کر کل دس ہزار روپئے وزیر اعلیٰ امدادی فنڈ میں جمع کرنے کے لئے آج ایس ڈی او کے ہاتھوں میں سونپ دیا ۔ ہم بات کررہے ہیں چندن نگر کے اردی بازار کے رہنے والے ایک چھوٹے سے کاروباری و سماجی خدمت گار محمد اکبر کی ۔ آج صبح ان سے ملاقات ہوئی تو بتایا کہ وہ چندن نگر کے ایس ڈی او کے یہاں جارہے ہیں اور پوری بات بتاتے ہوئے کہا کہ انکے دو بچے بیٹے کا نام افتخار حسن اور بیٹی کا نام آئشہ پروین ہے ۔ عید کے موقعے پر ان سے پوچھا کہ کپڑے خرید دوں ۔ اس پر ان دونوں بچوں نے کہا کہ نہیں ابا ہم اپنے لئے کپڑے اس سال عید میں کپڑے نہیں خریدیں گے ۔ لیکن آپ ہمیں کپڑا خریدنے کےلئے جو رقم خرچ کرتے ہیں اس رقم کو ہماری جانب سے وزیر اعلیٰ امدادی فنڈ میں دے دیں ۔ ان بچوں کی باتیں سن کر والدین حیرانی بھرے انداز میں خوشی کا اظہار کیا اور کہا کہ ضرور ایسا ہی کرتے ہیں ۔ اسکے بعد محمد اکبر دس ہزار روپئے کا چیک وزیر اعلیٰ ریلیف فنڈ کے نام سے کاٹا اور دونوں بچوں کو لیکر ایس ڈی او میڈم کے دفتر گئے اور انکے ہاتھ میں بچوں نے چیک سونپ دیا ۔ اس پر ایس ڈی او نے بچوں کے جزبات کا احترام کرتے ہوئے انکی حوصلہ افزائی کیں اور والدین کا بھی شکریہ ادا کیں

Get real time updates directly on you device, subscribe now.

Comments are closed.