Take a fresh look at your lifestyle.

کورونا کو لیکر مرکز کے پاس ٹھوس منصوبہ نہیں:وزیر گوتم دیب

0

جلپائی گوڑی،10،جون :ریاستی وزیر سیاحت گوتم دیب نے مرکزی حکومت پر کورونا کے لئے کوئی ٹھوس منصوبہ بندی نہ کرنے کا الزام عائد کیا ۔وزیر موصوف نے کہا کہ مرکزی حکومت کی عدم پالیسی کی وجہ سے مہاجر مزدور اتنی بڑی تعداد میں کورونا کا شکار ہو رہے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ مرکزی حکومت کو اس کی ذمہ داری اٹھانا ہوگی۔ وزیر گوتم دیب نے یہ باتیں بدھ کے روز جلپائی گوڑی سرکٹ ہاو¿س میں منعقدہ انتظامی اجلاس کے بعد ایک پریس کانفرنس میں کہی۔ انہوں نے کہا کہ اگر چار گھنٹے کے الٹی میٹم پر پورے ملک میں لاک ڈاو¿ن کی بجائے پانچ سات دن کے بعد ملک میں لاک ڈاو¿ن کا اعلان کیا جاتا تو 80فیصد تارکین وطن اپنے گھروں کو واپس ہو جاتے۔ انہوں نے کہا کہ اگر یہ ہوتا تو آج کورونا پورے ملک میں اس قدر بھیانک شکل اختیار نہیں کرتی۔ وزیر نے کہا کہ نہ صرف مہاجر مزدور بلکہ بڑی تعداد میں لوگ علاج کےلئے کسی دوسری ریاست گئے تھے ، جو اچانک لاک ڈاو¿ن کے سبب وہاں پھنس گئے ۔ انہوں نے کہا کہ اس کے ساتھ ہی بڑی تعداد میں لوگ دوسری ریاستوں میں گھومنے چلے گئے تھے۔وہیںطلبہ کی بڑی تعداد تعلیم کے سلسلے میں دوسری ریاستوں میں گئے تھے ، جو لاک ڈاو¿ن کی وجہ سے وہاں پھنس گئے ۔ گوتم دیب نے کہا کہ مرکزی حکومت نے تالا بندی کی وجہ سے مہاجر مزدوروں سمیت دیگر ریاستوں میں پھنسے ہوئے لوگوں کے ساتھ انتہائی غیر انسانی سلوک کیا ہے۔ اس دوران مختلف حادثات کے سبب مزدوروں کی ایک بڑی تعداد اپنی جانوں سے ہاتھ دھو بیٹھی۔ اس کے بعد جب مزدوروں کی خصوصی ٹرین چلائی گئی تو کارکنوں کی ایک بڑی تعداد ہلاک ہوگئی۔ وزیر گوتم دیب نے ان سب کےلئے مرکزی حکومت کو ذمہ دار ٹھہرایا۔

Get real time updates directly on you device, subscribe now.

Leave A Reply

Your email address will not be published.