Take a fresh look at your lifestyle.

بنگال دہشت گردی کرائم اور بم بنانے کا محفوظ ٹھکانہ:گورنر

0

کولکاتا،21،ستمبر: سوموارکے دن ایک بار پھر مغربی بنگال کے گورنر جگدیپ دھنکھڑ نے ریاست سے نصف درجن القاعدہ دہشت گردوں کی گرفتاری پر ممتا حکومت پر ایک بار پھر شدید تنقید کیا۔ انہوں نے اس بات کا اعادہ کیا کہ بنگال پہلے ہی دہشت گردی ، جرائم اور غیرقانونی بم سازی کی سب سے محفوظ منزل ہے۔ ریاستی ڈی جی پی کے اس بیان پر سخت رد عمل ظاہر کرتے ہوئے ڈی جی پی کا شترمرغ والا موقف پریشان کن ہے۔ در حقیقت ڈی جی پی نے اعتراض کیا ہے کہ این آئی اے نے پولس کو اطلاع دیئے بغیر ہی دہشت گردوں کی گرفتاری کے لئے آپریشن کیا۔ڈی جی پی کے اس موقف کے بارے میں گورنر نے ریاستی حکومت کو ایک خط بھیجا ہے۔ دھنکھڑ نے ٹویٹ کیا ‘ڈی جی پی کے شترمرغ کا موقف کافی پریشان کن ہے۔ ریاست دہشت گردی ، جرائم اور غیر قانونی بم سازی کے لئے پہلے سے ہی ایک محفوظ ٹھکانہ ہے۔ امید ہے کہ ممتا سرکار کو میرے خط کے بعد حقیقت کا ادراک ہوگا۔ بنگال پولس انسانی حقوق کے لئے خطرہ ہے اور حزب اختلاف کے ممبران اسمبلی ، ممبران پارلیمنٹ اور کارکنوں پر مہلک حملے روکنے میں ناکام رہی ہے۔ گورنر نے بھی ریاستی حکومت پر پولس کی یکطرفہ کارروائی پر آنکھیں بند کرنے کا الزام لگایا۔ انہوں نے کہا کہ پولس فرقہ وارانہ صورتحال میں یکطرفہ سلوک کرتی ہے جو ناقابل قبول ہے۔ انہوں نے کہا ، ‘اس نظام پر ریاست کے ناپسندیدہ افراد کا قبضہ ہے۔ یہ اقتدار میں غیر آئینی مداخلت ہے اور یہ ہر طرح کا جرم ہے۔ اہم بات یہ ہے کہ قومی تفتیشی ایجنسی (این آئی اے) نے ہفتہ کے روز بنگال کے مرشد آباد ضلع میں القاعدہ کے ماڈیول کا پردہ چاک کیا اور 6 مشتبہ دہشت گردوں کو گرفتار کیا جس کے بعد گورنر ریاستی حکومت پر حملہ آور ہیں۔

Get real time updates directly on you device, subscribe now.

Leave A Reply

Your email address will not be published.