Take a fresh look at your lifestyle.

راج بھون پر حملہ دستور ہند کی توہین کے مترادف: گورنر

کولکاتا،2،اکتوبر: مغربی بنگال کے گورنر جگدیپ دھنکھر نے جمعہ کے روز مغربی بنگال حکومت کو نشانہ بناتے ہوئے دعویٰ کیا ہے کہ ریاست میں آئینی اختیارات کے گلیاروں کے غیر اصولی لوگوں کی بھرمار ہے اور انتظامیہ بھی ان کے سامنے سر جھکائے بیٹھی ہے۔دھنکر ، جو ریاست کی ترنمول کانگریس حکومت کی شدید تنقید کرتے رہے ہیں ۔ انہوں نے یہ بھی کہا کہ راج بھون پر حملہ ملک کے آئین کی توہین کرنے کے مترادف ہے۔واضح ہو کہ گاندھی جینتی پر بیرک پور میں مہاتما گاندھی کو پھولوں کی خراج عقیدت پیش کرنے کے بعد گورنر نے کہا کہ ریاست میں اقتدار کے گلیارے غیرآئینی اختیارات سے بھرے ہوئے ہیں۔ پوری انتظامیہ بھی اس کے سامنے سر نگوں ہے جس کے پاس آئینی اختیار نہیں ہے۔انہوں نے کہا کہ افسران کو انتخابات کے دوران سیاسی کارکنوں کی طرح کام کرنے کی اجازت ہے۔گورنر نے ٹویٹر کے ذریعے وزیر اعلیٰ ممتا بنرجی سے درخواست کی کہ وہ ان کے ساتھ امن کو فروغ دینے اورعدم تشدد کو فروغ دینے کا عہد کریں۔دھنکھر نے ٹویٹ کیا ہے کہ گاندھی جینتی پر پیارے باپو کو خراج تحسین پیش کیا۔ عدم تشدد سے متعلق ان کے مقدس افکار انسانیت کو متاثر کرتے ہیں۔ ممتا بنرجی ،باپو کے نظریات ایک خوشحال اور جمہوری ماحول کو برقرار رکھنے میں ہماری مدد کرسکتی ہیں۔ آو¿ ہم تشدد کو ختم کرنے اور امن کو فروغ دینے کا عہد کریں۔انہوں نے پولیس اور انتظامیہ سے کہا کہ سیاسی کارکنوں کی طرح نہیں بلکہ سرکاری ملازمین کی طرح کام کریں۔گورنر کے پیغام پر رد عمل کا اظہار کرتے ہوئے ترنمول حکومت میں شامل وزیر وریتیا باسو نے کہا کہ دھنکر کسی خاص پارٹی کے ترجمان کی طرح سلوک کررہے ہیں۔باسو نے کہا کہ وہ گورنر کے عہدے کو "نیرجپال” میں تبدیل کررہے ہیں۔

Get real time updates directly on you device, subscribe now.

Comments are closed.