Take a fresh look at your lifestyle.

گورنر دھنکڑ کی پھر وزیراعلیٰ پر تنقید

کولکاتا،27 مئی : مغربی بنگال کے گورنر جگدیپ دھنکڑ ایک بار پھر وزیر اعلیٰ ممتا بنرجی کو ہدف تنقید بنایا ہے۔ بدھ کے روز انہوں نے ایک ٹویٹ کیا۔ اس میں انہوں نے وزیر اعلیٰ ممتا بنرجی کو ٹیگ کرنے کےلئے لکھا ہے کہ طوفان سے نمٹنے کےلئے میڈیا میں بڑے دعوے کرنے کے بجائے زمینی سطح پر کام کریں۔گورنر نے اپنے ٹویٹ میں کہا کہ بجلی ، پانی اور ضروری خدمات کو فوری طور پر معمول پر لانا چاہئے۔کولکاتا کے مختلف علاقوں اور باہر سے بھیانک مصائب کی اطلاعات ہیں۔ اب یہ وقت میڈیا میں بڑے بڑے دعوے کرنے کا نہیں ہے بلکہ زمین پر امداد اور بچاو¿ میں مصروف رہنے کاہے۔صورتحال اتنی خوفناک نہیں ہوتی اگر سیاست کی بجائے مناسب وقت پر تیاری پر توجہ دی جاتی۔ عوامی مقامات پر سینئر وزراءکے درمیان تو تو میں میں نہیں ہوتی جوکہ ایم ایل اے کی عوامی پٹائی اصل صورتحال کو بتاتا ہے۔
یہ بات قابل ذکر ہے کہ اس سے ایک روز قبل ، مغربی بنگال حکومت کی سینئر وزیر سادھن پانڈے نے ریاستی شہری ترقیاتی وزیر اور کولکاتا کارپوریشن کے ایڈمنستریٹر فرہاد حکیم کے عملی طرز پر سوال اٹھایا ہے۔ انہوں نے الزام لگایا ہے کہ کولکاتا میونسپل کارپوریشن نے اس طوفان سے نپٹنے کے لئے نہ تو متعلقہ محکموں سے ملاقاتیں کی ہیں اور نہ ہی کوئی پیشگی تیاری۔ جوابی کارروائی میں فرہاد نے کہا کہ وزیر کو خود تیار رہنا چاہئے تھا۔اگر میں نہیں گیا تو انہوں نے فون کیوں نہیں کیا؟ اس کے علاوہ 3 روز قبل انٹالی کے ایم ایل اے کو مقامی لوگوں نے گھیرے میں لے کر پیٹا تھا۔ در حقیقت امفان طوفان مغربی بنگال میں 20 مئی کو آیا تھا۔ اس کے بعد 8 دن گزر چکے ہیں ، لیکن صورتحال معمول پر نہیں آسکے ہےں۔علاقوں میں بجلی کی فراہمی متاثر ہے اور پینے کا صاف پانی دستیاب نہیں ہے۔ لوگ اس سے بہت پریشان ہیں۔

Get real time updates directly on you device, subscribe now.

Comments are closed.