Take a fresh look at your lifestyle.

پروہتوں کو بھتہ اور پوجا کمیٹیوں کو50 ہزار کے عطیات کو لے کر ہائی کورٹ میں داخل

کولکاتا10 اکتوبر:سیٹو کے ایک لیڈر سوربھ دتہ نے ہائی کورٹ میں پی آئی ایل داخل کرکے یہ سوالات اٹھایا کہ برسراقتدار حکومت آخرکیاوجہ ہے کہ درگاپوجا میں تمام کلب کوعطیہ دینے کااعلان کیا ؟ اورکیوں پجاری وپروہت کو بھی اس سے فائدہ پہنچایا۔ اب ہائی کورٹ میںPIL کے تحت اس کیس کی شنوائی آئندہ بدھ کو ہوگی ۔ ان دونوں کیس کی سماعت سنجیو بندو پادھیائے کے ڈویژن بنچ میں ہوگی۔
اس بار درگاپوجا کمیٹیوں کو 50,000 روپئے بطورعطیات دینے کااعلان ممتا بنرجی نے کیاہے۔ اس کے علاوہ پوجا میں شامل پجاری و پروہتوں کو بھی 1000 روپئے بطور بھتہ دیاجائے گا۔ برسراقتدار پارٹی کے خزانے سے۔
اپوزیشن ان عطیات کوسنجیدگی سے لیتے ہوئے یہ الزام لگایا کہ الیکشن سے پہلے ترنمول پارٹی کایہ سیاسی ہتھ کنڈے میں بام اورکانگریس کایہ کہنا ہے کہ اب ترنمول کانگریس ہندوﺅں کو روپئے کے سہارے اپنی طرف کرنے کامنصوبہ بنایاہے جس طرح بی جے پی نے اس روایت کو شروع کیاتھا۔ انہیں سیاسی چالاکی کوذہن میں رکھ کربایاں محاذ کے مزدور یونین کے نیتا سوربھ دتہ نے ممتا حکومت کے خلاف ہائی کورٹ میںPIL داخل کیاہے۔
ترنمول پارٹی نے عطیہ کی اس رسم کو 2018 سے شروع کیاتھا اس بار 10 ہزار روپئے دئیے گئے تھے۔ مگرگزشتہ برس بھی دتہ بابو نے کیس کیاتھا، اس پرریاستی حکومت نے یہ بیان دیا کہ ٹرافک پولس کے سیف ڈرائیو، سیولائف، اسکیم کے لئے یہ روپئے دئیے گئے تھے جس پرکورٹ نے معاملہ کوروک دیاتھا۔ اس بار سوربھ دتہ نے سپریم کورٹ کادروازہ کھٹکھٹایا ہے مگرہائی کورٹ میں ابھی اس کیس کی شنوائی نہیں ہوئی ہے۔
اس وقت سوربھ دتہ کرونا کے شکار ہوکراسپتال میں زیرعلاج ہیں صحت یابی کے بعدوہ پھرسے اپنے وکیل سے صلاح مشورہ کریں گے۔

Get real time updates directly on you device, subscribe now.

Comments are closed.