Take a fresh look at your lifestyle.

وشو بھارتی معاملے میں ہائی کورٹ نے کمیٹی تشکیل دی

کولکاتا،18،ستمبر: کلکتہ ہائی کورٹ نے وشوا بھارتی یونیورسٹی کے پوش میلہ گراو¿نڈ میں زیر تعمیر دیوار توڑنے کے واقعے کی تحقیقات کےلئے چار رکنی کمیٹی تشکیل دی ہے۔ یہ کمیٹی کلکتہ ہائیکورٹ کے جج سنجیو بندھوپادھیا ، جج ارجیت بندھوپادھیا ، ریاستی ایڈووکیٹ جنرل کشور دتہ اور ایڈیشنل سالیسیٹر جنرل پر مشتمل ہے۔قابل ذکر ہے کہ کلکتہ ہائی کورٹ کے رام پرشاد سرکار نامی ایک وکیل نے اس معاملے کی سی بی آئی تحقیقات کےلئے درخواست دائر کی تھی ، جس پر چیف جسٹس ٹی بی رادھا کرشنن اور جسٹس ارجیت بندھوپادھیا کے بنچ نے کمیٹی تشکیل دینے کی ہدایت کی تھی۔زہن نشیں ر ہے کہ وشوا بھارتی انتظامیہ نے غیر اخلاقی سرگرمیوں کو روکنے کےلئے پوش میلہ گراو¿نڈ میں دیوار کھڑی کرنے کا فیصلہ کیا تھا۔ اس دیوار کی تعمیر کا کام پچھلے 17 اگست سے شروع ہوا تھا ، حالانکہ کچھ لوگوں نے آکر اسے توڑ دیا تھا۔ اس نے وشو بھارتی کیمپس میں بھی گھس کر توڑ پھوڑ کی۔ترنمول کے مقامی ایم ایل اے نریش بودی اور بیربھوم ضلع ترنمول کانگریس کے صدر عنبرت منڈل پر تخریب کاری کا الزام عائد کیا گیا ہے۔ رام پرشاد حکومت نے کہا کہ اس معاملے کی غیر جانبداری اور صحیح طریقے سے تحقیقات ہونی چاہئے۔وشوا بھارتی کیمپس کی سکیوریٹی کےلئے سی آئی ایس ایف تعینات کیا جائے۔ وشو بھارتی انتظامیہ کا کہنا ہے کہ پوش میلہ گراو¿نڈ میں شام کے بعد غیر اخلاقی سرگرمیاں شروع ہوتی ہیں۔ اس کو روکنے کےلئے دیوارکھری کی جا رہی تھی۔

Get real time updates directly on you device, subscribe now.

Comments are closed.