Take a fresh look at your lifestyle.

ہائی کورٹ نے پورٹ ٹرسٹ سے نام تبدیلی کی وجہ پوچھی

کولکاتا،8ستمبر: ہائی کورٹ کے چیف جسٹس ٹی بی این ارادھا کرشنن و جسٹس روجیت بندوپادھیائے کی ڈویژن بنچ نے مرکیزی حکومت سے یہ جانکاری چاہی کہ کس وجہ سے کولکاتا پورٹ کا نام بدل کر ڈاکٹر شیاما پر شاد مکھر جی کے نام پر رکھا گیا۔ انہوں نے پورٹ ٹرسٹ کو بھی اس سے متعلق تفصیلات کو بذریعہ حلف نامے کے کورٹ میں داخل کرنے کی ہدایت کی ہے۔ یاد رہے کہ پورٹ کے بندر گاہ کا نیتا جی سبھاش چندر بوس نام تھا مگر امسال 12جنوری کو وزیر اعظم نریندر مودی نے کولکاتا پورٹ ٹرسٹ کی ایک تقریب میں آکر اس کا نام ڈاکٹر شیاما پر شاد مکھر جی رکھ دیا۔ اب نام کی تبدیلی سے متعلق ہائی کورٹ مرکز کے علاوہ پورٹ ٹرسٹ سے بھی جاننے کی خواہش ظاہر کی۔

Get real time updates directly on you device, subscribe now.

Comments are closed.