Take a fresh look at your lifestyle.

ہگلی کے بند پڑے جوٹ ملوں کو کھولنے کی مانگ پر کانگریس اور سی پی ایم کا مشترکہ جلوس

0

کولکاتا 19ستمبر: اپوزیشن لیفٹ فرنٹ اور کانگریس نے مشترکہ طور پر ہگلی ضلع کے چاپدانی میں بند نارتھ بروک جوٹ مل کو فوری طور پر کھولنے کا مطالبہ کرتے ہوئے ایک احتجاجی جلوس نکالا۔ مل گیٹ پر اجلاس کا بھی اہتمام کیا۔ ریاستی اسمبلی کے اپوزیشن لیڈر عبد المنان کی سربراہی میں کانگریس اور بائیں محاذ کے سینکڑوں حامی سب سے پہلے چاپدانی میں پالتا گھاٹ کے قریب جمع ہوئے۔ اس جلوس کے بعد انہوں نے جھنڈے کو اپنے ہاتھ میں لیا اور ریاست میں حکمراں جماعت ترنمول کانگریس اور بی جے پی کے خلاف نعرے لگاتے ہوئے نارتھ بروک جوٹ گیٹ پہنچے۔اس کے بعد کانگریس اور سی پی آئی (ایم) کے رہنماو¿ں نے کارکنوں کی موجودگی میں اجلاس کا اہتمام کیا۔ اس دوران عبد المنان نے کہا کہ جب کہ مرکز میں بی جے پی کی حکومت ایک کے بعد ایک سرکاری اداروں کو فروخت کرنے میں مصروف ہے چونکہ ریاست میں ترنمول کانگریس نے اقتدار سنبھالا ہے ، ریاست میں ایک بھی بڑی فیکٹری قائم نہیں ہوسکتی ہے۔اس کے برعکس ریاست میں آہستہ آہستہ بہت ساری چھوٹی اور بڑی ملیں اور کارخانے بند کردیئے گئے ہیں۔ انہوں نے مطالبہ کیا کہ انتظامیہ کو حکومت کی مداخلت کے ذریعے بند نارتھ بروک جوٹ مل کو فوری طور پر کھولنا چاہئے۔ معلوم ہو گا کہ 3 ستمبر کو کنٹریکٹ ورکرز کو اس مل کے ایک شعبہ میں کام کرنے کے لئے انتظامیہ اور مزدوروں کے مابین تنازعہ پیدا ہوجانے کے بعد مزدور ہڑتال پر چلے گئے تھے۔ اس کے بعد سے مل بند ہے۔ اس مل میں لگ بھگ چار ہزار مزدور کام کرتے ہیں۔ مل بند ہونے کی وجہ سے ان مزدوروں اور ان کے اہل خانہ کو بڑی مشکلات کا سامنا ہے۔ اپوزیشن لیفٹ فرنٹ اور کانگریس نے مشترکہ طور پر ہگلی ضلع کے چاپدانی میں بند نارتھ بروک جوٹ مل کو فوری طور پر کھولنے کا مطالبہ کرتے ہوئے ایک جلوس نکالا۔ مل گیٹ پر اجلاس کا بھی اہتمام کیا۔

Get real time updates directly on you device, subscribe now.

Leave A Reply

Your email address will not be published.