Take a fresh look at your lifestyle.

سابق وزیراعلیٰ جیوتی باسو کے گھر اندرا بھون کو ریاستی مہمان خانہ بنانے کا منصوبہ

کولکاتا،یکم ،اگست:اندرا بھون جو اب مغربی بنگال کے سابق وزیر اعلیٰ اور آنجہانی کمیونسٹ رہنما جیوتی باسو کی رہائش گاہ کے طور پر جانا جاتا ہے جو کولکاتا سے متصل سالٹ لیک میں واقع ہے اب ایک مہمان خانہ ہوگا۔ ریاستی حکومت نے اس کی منصوبہ بندی کی ہے۔ تمام سرکاری مہمانوں کو یہاں جگہ دی جائے گی۔واضح ہوکہ 1971 میں بنگلہ دیش کی آزادی کے بعد اس عمارت کا نام اس وقت کے وزیر اعظم اندرا گاندھی کے نام پر اندرا بھون رکھ دیا گیا تھا ، کیونکہ بنگلہ دیش کی آزادی کا سارا کریڈٹ اندرا گاندھی کو دیا گیا اور لوگوں نے جشن منا کر اندرا گاندھی کو تہنیت پیش کی گئی تھی۔ تاہم کچھ سال قبل وزیر اعلیٰ ممتا بنرجی نے اندرا بھون کا نام تبدیل کرکے شاعرنذرالاسلام بھون کردیا تھا۔ لیکن زیادہ تر لوگ اسے اب بھی اندرا بھون کے نام سے جانتے ہیں۔در حقیقت ابتدائی طور پر ریاستی حکومت نے اس عمارت میں شاعر نذرال کے نام سے ایک اکیڈمی کھولنے کا منصوبہ بنایا ہے جہاں حکومت نے میوزیم اور تحقیقی مرکز کھولنے کی خواہش کا اظہار کیا تھا۔ لیکن اب وزارت شہری ترقی نے اندرا بھون کو ایک گیسٹ ہاو¿س بنانے کا منصوبہ بنایا ہے۔اس منصوبے پر کام شروع ہوچکا ہے۔ اہم بات یہ ہے کہ اس عمارت میں جیوتی باسو جو 24 سال تک بطور ریاستی وزیر اعلیٰ کے رہائش پذیر رہے۔تقریباً دو دہائیوں تک یہاں رہنے کے بعد انہوں نے آخری سانس لی۔سن1971 میں اس عمارت کا نام پارن کاٹیج تھا۔ اسی تناظر میں اس عمارت کا نام بھی تبدیل کرکے اندرا بھون رکھ دیا گیا تھا۔تاہم جیوتی باسو وزیر اعلیٰ بننے کے بعد ابتدائی مرحلے میں راج بھون میں رہائش پذیر تھے لیکن 90 کی دہائی میں وہ مستقل طور پر رہنے کے لئے یہاں منتقل ہوگئے جہاں انہوں نے آخری سانس لی۔

Get real time updates directly on you device, subscribe now.

Comments are closed.