Take a fresh look at your lifestyle.

ائیرپورٹ پرساز وسامان کوجراثیم کش بنانے کیلئے مخصوص آلہ بٹھایاگیا

کولکاتا5 اکتوبر:جدید تکنیکی آلات کے ذریعہ ہی اب تمام مسافروں کے ساز وسامان کو جراثیم کش کرنے کاعمل کلکتہ ائیرپورٹ میںشروع ہوگیا ہے۔ڈومیسٹک ائیر ٹویل کے 2 نمبر بیگیج بیلٹ میں اس آلہ کو نصب کیاگیا ہے جب کہ روانگی والی گیٹ پرابھی بھی ہاتھوں میں پکڑے آلات سے جراثیم کش انجام دیاجارہاہے۔ائیرپورٹ کے اعلیٰ منتظم کاروں نے یہ بتایا کہ رواں مہینے میں ہی روانگی والے گیٹ پر یہ آلہ نصب کیاجائے گا۔ائیرپورٹ کے اضافی نگراں کایہ کہنا ہے کہ مسافرو ںکے مال واسباب کو جراثیم کش بنانے کے لئے ہاتھوں کے ذریعہ نہایت ہی کم وقت لگتاہے ۔ اب سے مسافر اپنے ساز و سامان کو آلہ خانے کے بیلیٹ میںاٹھاکر رکھ دیں گے۔تو یہ ساز وسامان خود بخود جراثیم کش ہوکر باہر نکل آئیں گے ۔اس وقت وقتی طورپر ایک آلہ کو گیٹ پرآزمائشی کے لئے لگایاگیا ہے۔ ائیرپورٹ کے ذرائع کے مطابق اس آلے کی قیمت لگ بھگ سات لاکھ روپئے ہے۔اب آن لاک میں وقفے کی میعاد پورے ہوجانے پر ائیرپورٹ میں بتدریج ہماہمی دیکھی جارہی ہے مسافروں کی تعداد میں بھی اضافہ ہورہاہے۔ گمان ہے کہ یہ مرض پر سے مراجعت کرے گی۔ اس کومدنظر رکھتے ہوئے اب ائیرپورٹ کے اندر پرسنل پروٹیکٹ اکیوپمنٹ (پی پی آئی) کٹ پھینکنے کا کوڑا دان بھی بٹھایاگیا ہے کیوں کہ اوپر محل کی ہدایت پرمسافروں کو پی پی آئی کٹ پہن کرہی سفرکرنے دیاجارہاہے۔ یہ کوڑا دان ان مسافروں کے لئے رکھاگیا ہے تاکہ اترنے کے بعد وہ اسی میںپی پی آئی کٹ کو پھینک سکتے ہیں اب روزانہ ہی ائیرپورٹ کوجراثیم کش بنانے کاعمل تیز ہے اس کے علاوہ مسافروں کومحفوظ رکھنے کے لئے دوری بنائے رکھنے، سینی ٹائزر، صابن کے استعمال پرتاکید کی جارہی ہے۔ کروناوائرس کو پسپا کرنے کے لئے ائیرپورٹ کے باہر واندر بھی تمام حفاظتی اقدامات کے بورڈ آویزاں کردئیے گئے تاکہ آنے والے اورجانے والے مسافروں کی یہ نظروں میں رہے۔ ائیرپورٹ میں آنے والے مسافروں کا تھرمل اسکینر سے بھی جانچ ہورہی ہے اوریہ بھی کہہ دیاگیا ہے کہ چھینکتے اور کھانستے وقت احتیاط برتیں اوردوری بنائے رکھیں

Get real time updates directly on you device, subscribe now.

Comments are closed.