Take a fresh look at your lifestyle.

کولکاتا میں پہلی بار غیر سرکاری بسوں میں خواجہ سراوں کےلئے نشستیں مختص

کولکاتا،/13اگست: ملک میں پہلی بار کولکاتاکے غیر سرکاری بسوں میں خواجہ سراو¿ں کے لئے نشستیں مختص کی جارہی ہیں۔ ‘پیڈ مین’ کے نام سے مشہور شوبھن مکھوپادھیا کے اقدام پر یہ سہولت شہر نشاط میں جمعہ سے دستیاب ہونے جارہی ہے۔ انہوں نے غیر سرکاری بس مالکان ایسوسی ایشن کو تجویز پیش کی ، جسے انہوں نے قبول کرلیا ہے ، حالانکہ تمام بسوں میں سیٹیں مراحل میں محفوظ ہوں گی۔واضح ہو کہ بانس درونی کے رہنے والے شوبھن نے کہاکہ ‘فی الحال خواجہ سراو¿ں کےلئے مخصوص نشستوں کا بندوبست 205 اور 205 اے روٹس کی بسوں میں شروع ہونا ہے۔ میں کچھ دیگر روٹ کے بس مالکان سے بات چیت کر رہا ہوں اور جلد ہی خواجہ سراو¿ں کے لئے مخصوص نشستیں مل جائیں گی۔ شوبھن نے مزید کہاکہ کچھ سال پہلے میرا ایک واقف ٹرانسجینڈر میٹرو ٹرین سے ہٹا دیا گیا کیونکہ وہ خواتین کی نشست پر بیٹھتی تھی۔ اس واقعے کے بعد سے میں نے عزم کیا کہ خواتین ، معذور اور بزرگ شہریوں کی طرح ٹرانس جنڈروں کےلئے مخصوص نشستوں کا انتظام کروں گا۔اس کا آغاز بسوں سے ہوگا۔ واضح رہے کہ شوبھن کی کوشش کی وجہ سے ہی یہ ممکن ہے کہ کولکاتہ میونسپل کارپوریشن کے تحت چلنے والے بیت الخلاءمیں ہجڑوں کےلئے الگ الگ بیت الخلا ممکن بنائے گئے ہیں۔ ان ٹوائلٹوں میں خواتین کو صرف پانچ روپے میں سینیٹری پیڈ بھی مہیا کرایاجاتا ہے۔ بس سنڈیکیٹس کی مشترکہ کونسل کے جنرل سکریٹری تپن کمار بنرجی نے اس اقدام کا خیرمقدم کیا اور کہا کہ میں ہمیشہ اتھارٹی کے قیام کےلئے جدوجہد میں رہتا ہوں۔ میں ذاتی طور پر بھی اس اقدام کا خیرمقدم کرتا ہوں۔

Get real time updates directly on you device, subscribe now.

Comments are closed.