Take a fresh look at your lifestyle.

فرانس حکومت کے جابرانہ رویے کے خلاف کولکاتا میںبھی مظاہرے شروع

0

کولکاتا31 اکتوبر:فرانس کے صدر کے خلاف پورے ملک کے مسلمانوں کے اندرغم و غصہ بڑھتا جارہاہے۔اب کولکاتا بھڑک اٹھا کولکاتا کے علی پور سنتوش رائے روڈ پرفرانس کنسلیٹ کے سامنے مسلم فرقے کے لوگوںنے زبردست مظاہرہ کیا ۔ پولس نے ان حمیت وغیرت سے مملو مسلمانوں کوکونسلیٹ کے 200 میٹر سے آگے جانے سے روک دیا۔ سنیچر کو مسلم فرقے کے کچھ اہم شخصیتیں جماعت کے ساتھ وہاں آئے تھے ڈیپوٹیشن جمع کرنے۔ مگرپولس نے ان کواندرجانے سے روک دیا۔ مگرلوگوں کے اندر فرانس کے صد رکے خلاف غصہ بھراہواتھا اوروہ اندر جانے کے لئے مچل رہے تھے ۔ مگرپولس نے 200 میٹر آگے ہی ان کی راہ میںحائل ہوگئی۔ جس کے بعد جذبہ ایمانی سے سرشار لوگوں نے وہیں سے نعرے لگانے شروع کردئے۔
یاد رہے کہ تاریخ کے معلم سیموئل پیانک کے قتل کے بعدفرانس کی حکومت مسلمانوں کے خلاف سخت قدم اٹھایا ہے۔ مسجدوں کوبند کیاگیا۔ گھروں میںتلاشی بڑھادی گئی ۔ سوشل میڈیا پرسختی کی گئی۔ اس کے بعد حکومت نے لاتعداد جانچ کی کارروائیاں شروع کردی ہے۔ دراصل قتل کوہدف بناکرہی اس طرح کی سخت اقدامات مسلم فرقے کے خلاف فرانس حکومت نے اٹھائی ہے جس کی آنچ اب کولکاتا میں بھی پڑ رہی ہے۔

 

Get real time updates directly on you device, subscribe now.

Leave A Reply

Your email address will not be published.