Take a fresh look at your lifestyle.

ممتا حکومت کا پرائیوٹ بس ٹیکس پر بڑی راحت کا اعلان

کولکاتا،6،اگست:ریاست کے نجی بس اور منی بس مالکان کے لئے خوشخبری ہے۔ ریاستی حکومت نے نجی بس ٹیکس کے حوالے سے ایک بڑا اعلان کیا ہے۔ جمعرات کے روز ریاستی سکریٹریٹ نبانہ میں وزیر اعلیٰ ممتا بنرجی کی موجودگی میں ہوم سکریٹری الپن بندھوپادھیائے نے اگلے 30 ستمبر تک نجی بسوں اور منی بسوں کا ٹیکس معاف کرنے کا اعلان کیا۔ موٹر گاڑیوں کا اضافی ٹیکس کے ساتھ اجازت نامہ فیس معاف کرنے کا فیصلہ کیا گیا ہے۔ یہ قابل ذکر ہے کہ کرونا انفیکشن کے خدشے کے پیش نظر جاری لاک ڈاو¿ن کی وجہ سے پبلک ٹرانسپورٹ ایک طویل وقت کے لئے مکمل طور پر بند تھی۔تاہم بعد میں غیر مقفل ہونے پر آٹو گورنمنٹ اور نجی بسوں کو چلانے کی اجازت دی گئی۔ ایسی صورتحال میں ، ریاستی حکومت نے مسافروں کی تعداد کا فیصلہ کیا۔ یہ بھی ہدایت کی گئی تھی کہ کرایہ ایک جیسا ہی رکھا جائے۔ نجی بس مالکان نے کرایوں میں اضافے کا مطالبہ کرتے ہوئے انتظامیہ سے متعدد بار رابطہ کیا تھا۔ بس مالکان کا دعوی ہے کہ ان کی آمدنی میں کمی واقع ہوئی ہے۔ انہوں نے بار بار بس کے کرایوں میں اضافے کا مطالبہ کیا۔اکثر ملاقاتیں ہوتی رہی ہیں۔تاہم ریاستی حکومت اس مطالبے کو ماننے سے گریزاں ہے۔ اس لئے 15 ہزار روپے دینے کا فیصلہ کیا گیا۔ تاہم بس مالکان ایسوسی ایشن بار بار کہہ چکی ہے کہ اس میں کوئی فائدہ نہیں ہے۔ جمعرات کے روز وزیر اعلی ممتا بنرجی نے کہا کہ ریاستی سکریٹریٹ نبانوں نے 15،000 روپے کی بجائے ٹیکس میں چھوٹ کا مطالبہ کیا ہے۔اس کے مطابق ریاستی حکومت نے ٹیکس معاف کرنے کا فیصلہ کیا ہے۔ اس سے قبل وزیر اعلی ممتا بنرجی نے جمعرات کو کہا تھا کہ ریاستی حکومت کرونا وائرس سے نمٹنے کےلئے ہر طرح کے اقدامات کررہی ہے۔ کرونا انفیکشن کا پتہ لگانے اور اسے دور کرنے کے ٹیسٹوں کی تعداد میں اضافہ کیا گیا ہے۔ تحقیقات کی تعداد میں اضافہ ہوا ہے لہٰذا متاثرہ افراد کی تعداد بھی بڑھ رہی ہے۔ڈرنے کی ضرورت نہیں ہے۔ انہوں نے کہا کہ ریاستی حکومت کا مقصد جلد سے جلد متاثرہ افراد کی تلاش اور ان کا علاج کرنا ہے۔

Get real time updates directly on you device, subscribe now.

Comments are closed.