Take a fresh look at your lifestyle.

کدو میں موبائل چھپا کر اسمگلنگ کی کوشش میںایک گرفتار

0

کولکاتا،30،ستمبر: جنوبی بنگال کی سرحد پر بی ایس ایف کے جوانوں کی چوکسی اور ہوشیاری کی وجہ سے اسمگلر مختلف حربوں کو آزمانے کی کوشش کر رہے ہیں لیکن ان کے منصوبے کامیاب نہیں ہو پارہے ہیں۔ بی ایس ایف کے ساو¿تھ بنگال فرنٹیئر کے اہلکاروں نے بنگلہ دیش میں اسمگلنگ کو ناکام بناتے ہوئے کدو (کمہار) کے اندر موبائل فون چھپا کر اسمگلنگ کیلئے بنگال کے سرحدی مالدہ ضلع سے ایک اسمگلر کو گرفتار کرلیا ہے۔بی ایس ایف کی جانب سے ایک بیان میں کہا گیا ہے کہ کدو سے 11 موبائل فونز برآمد ہوئے ہیں جن کی لاگت کا تخمینہ 93،500 روپے ہے۔ 24 ویں بٹالین کے مالدہ میں بی ایس ایف کی بارڈر پوسٹ چوریانت پور اسمگل کرنے کی کوشش کی جارہی تھی۔ بیان کے مطابق موبائلوں کی اسمگلنگ کے بارے میں انٹلیجنس اطلاع موصول ہونے کے بعد سرحدی چوکی چوریاںت پور کے قریب ترابندی گیٹ نمبر 13 کے قریب تعینات فوجیوں کو الرٹ کردیا گیا۔ اس دوران فوجیوں نے ایک شخص کو پھاٹک کے قریب مشکوک حالت میں چلتے ہوئے دیکھا۔ جیسے ہی وہ شخص اس طرف جانے کے لئے گیٹ کے قریب پہنچا گیٹ کے بھیجنے والے نے اسے روک لیا۔ تلاشی کے دوران اس کے بیگ میں ایک بڑا کدو ملا جس پر کئی کٹے نشانات تھے۔ جب شک ہوا کہ جب فوجیوں نے کدو سے مستطیل کٹ ہٹایا تو اس کے اندر کھوکھلے حصے سے پلاسٹک کے پیکٹ میں رکھے 10 موبائل فون ملے تھے۔ ایک موبائل اسمگلر کے قریب بھی ملا۔ پکڑے گئے اسمگلر کا نام عاصم منڈل ہے۔ وہ مالدہ کے علاقے کالیاچک پولس اسٹیشن کا رہائشی ہے۔ تفتیش کے دوران اس نے بتایا کہ وہ کیریئر کا کام کرتا ہے۔ ایک اور سمگلر نے اسے سرحد عبور کرنے کے لئے دے دیا۔ اس کا کے عوض اسے 15،000 روپے ملیں گے۔ بی ایس ایف نے مزید قانونی کارروائی کے لئے اسمگلر کو پکڑے گئے موبائلوں کے ساتھ گول گنج پولس اسٹیشن کے حوالے کردیا۔ اس کے علاوہ ایف آئی آر بھی درج کروائی گئی ہے تاکہ اس گینگ میں ملوث دیگر اسمگلروں کو بھی سخت کیا جاسکے۔

Get real time updates directly on you device, subscribe now.

Leave A Reply

Your email address will not be published.