Take a fresh look at your lifestyle.

گارجین و طلبہ کاٹیچر انچارج کو اسکول میں بند کرکے احتجاج

0

مالدہ: 10جولائی: جمعہ کے روز مالدہ ضلع کے ہریش چندر پور نمبر ایک بلاک کے مہندر پور گرام پنچایت میں مہندر پور ہائی اسکول میں طلباءاور والدین نے ٹی آئی سی کی تقرری میں بے ضابطگیوں سمیت متعدد الزامات کے تحت احتجاج کیا۔ اس واقعے کے بعد علاقے میں شدید تناو¿ دیکھا گیا۔ معلومات کے مطابق جمعہ کے روز ، نومنتخب ٹی آئی سی نور الاسلام سرکاری حکم پر بچوں کو چاول کی دال ، آلو اور سینیٹیریئر دینے اسکول پہنچے۔ جیسے ہی وہ اسکول پہنچے ، والدین اور طلباءنے انہیں گھیر لیا اور احتجاج شروع کردیا۔ ان لوگوں نے اسکول کے مرکزی دروازے پر تالہ لگایا اور لگ بھگ پانچ گھنٹوں تک احتجاج کیا۔ جیسے ہی اسکول میں احتجاج کی اطلاع ملی ، ہریش چندر پور پولیس اسٹیشن کی پولس اسکول پہنچ گئی اور صورتحال پر قابو پانے کی کوشش شروع کردی۔ پولس کی مستعدی سے مظاہرین کے چنگل میں پھنسے کو ٹیچر انچارج کو باہر نکالا گیا۔ والدین تفضل الاسلام ، راحن الحق اور ساجد الاسلام نے الزام لگایا کہ جب لاک ڈاو¿ن چل رہا تھا تو منیجنگ کمیٹی کے ممبران نے قواعد کے خلاف ہوکر نور الاسلام کو ٹی آئی سی کے عہدے پر مقرر کیا۔ انہوں نے یہ تقرری سنیئریٹی کی بنیاد پر نہیں کی۔ انہوں نے بتایا کہ انتظامی کمیٹی جو 5 سال سے بڑی تھی کو بحال کردیا گیا ہے۔ انہوں نے یہ بھی کہا کہ منیجنگ کمیٹی کے ممبروں کے بچے اس اسکول میں نہیں پڑھتے ہیں۔منجنگ کمیٹی کے ممبر پنکج کمار داس نے بتایا کہ ٹی آئی سی کو سرکاری قواعد کے مطابق 11 افراد کی منیجنگ کمیٹی کے ممبروں کی رضامندی کی بنیاد پر مقرر کیا گیا ہے۔ انہوں نے کہا کہ یہاں کسی بھی طرح کی ذاتی دلچسپی کا سوال ہی پیدا نہیں ہوتا ، اسکول کی فلاح و بہبود کے پیش نظر ٹی آئی سی کا تقرر کیا گیا ہے۔ ایس آئی شرمیلا گھوش نے بتایا کہ تیاکسی کی تقرری کا عمل مکمل طور پر اسکول منیجنگ کمیٹی کے ہاتھ میں ہے۔ انہوں نے اسکول کی بہتری کے لئے منیجنگ کمیٹی کے ذریعہ ٹی آئی سی کی تقرری کی بھی امید کی۔ انہوں نے بتایا کہ اس سلسلے میں ایک شکایت نامہ موصول ہوا ہے۔ وہ اس کی تحقیقات کرے گی۔ بی ڈی او انروان باسو نے بتایا کہ مڈ ڈے کھانے میں بے ضابطگیوں کی شکایات ہیں۔ انہوں نے کہا کہ اسکول کھلنے کے بعد اس کی تحقیقات کی جائیں گی۔

Get real time updates directly on you device, subscribe now.

Leave A Reply

Your email address will not be published.