Take a fresh look at your lifestyle.

سوگت رائے بھاجپا کے ایک بھاشا ایک پارٹی سے برگشتہ

کولکاتا ، 24 نومبر:سوگت رائے نے ممتا کی توصیف کرتے ہوئے کہاکہ صرف ممتا بنرجی ہی مذہب کا بہتر طورپر تحفظ کرسکتی ہیں۔ ایک پریس کانفرنس میں سوگت رائے نے ایسا ہی اپنا خیال ظاہر کیا۔ ادھر کچھ دنوں سے ترنمول برابر پریس کانفرنس کرکے بی جے پی پر نشانہ سادھے جارہی ہے اس حالات کے تناظر میں سوگت رائے نے یہ کہاکہ اس وقت ملک میں جو حالات بگڑ رہے ہیں اس سے ہم لوگوں کے اندر تشویش بڑھتی جارہی ہے۔ بی جے پی ملک میں ایک ہی زبان و بھاشا کارواج دینے پر آمادہ ہے اب ہم لوگ مشورہ کرنے کءبجائے مثبت خیالات کو تشہیر کرنے پرتلے ہوئے ہیں جو بھی قائم شدہ ادارے ہیں وہ بتدریج شکست وریخت کے کگار پرہیں۔ہم لوگ عوام سے درخواست کرتے ہیں کہ ملک کاشیرازے اوربی جے پی کے خطرناک مقاصد کو پورا کرنے کے خلاف کھڑے ہوجائیں۔ دمدم کے ترنمول ایم پی سوگت رائے نے کہاکہ بی جے پی میں کئی ریاستوں پرقبضہ جمائے ہوئے ہے۔ جہاں پریہ نہیں ہے وہاں لوگوں کو لالچ دے کربھڑکانے میںمصروف ہے مگربنگال میں بی جے پی کے ناپاک ارادے کی تکمیل نہیں ہوگی۔ یہاں وہ ناکام رہے گا ۔ انہوں نے بنگال کے عوام سے پرزور اپیل کی ہے کہ بنگال سے بی جے پی کو ناکام بنائی۔ یہ پارٹی تھکی ہوئی ہے۔ یہاں کے عوام سے ناکام ہونے کے بعد باہر سے لیڈروں کوبلاکریہاں کے لوگوں کواکسانے میں لگی ہے۔ انہوں نے گورنر کو بھی آڑے ہاتھوں لیا کہاکہ گورنر وہ بھاجپا کے اشار ے پرچل رہے ہیں یہاں گورنر کی جو حیثیت ہے وہ پوسٹ بھی بدنام ہورہی ہے۔ اس کے بعد شوبھندو کے بارے میں کہاکہ وہ ٹھیک ہے اورہمارے ساتھ ہے۔ ان کے بیان سے کوئی بھی علیحدگی کااشارہ نہیں ملاہے۔ وقتی ناراضگی ہے دھیرے دھیرے جاتا رہے گا۔

Get real time updates directly on you device, subscribe now.

Comments are closed.